×

شریک حیات سے اچھا تعلق کس حد تک ضروری

شادی کے بعد شریک حیات سے اچھا تعلق کس حد تک ضروری؟ تحقیق
اگر آپ اپنی شادی سے خوش ہیں تو اچھی خبر یہ ہے کہ اس کا فائدہ زندگی بھر ہوتا ہے۔

شدہ افراد جو اپنے رشتے سے بہت خوش ہوتے ہیں، ان میں درمیانی عمر میں مو-ت کا خطرہ 20 فیصد تک کم ہوجاتا ہے، خصوصاً ایسے لوگوں کے مقابلے میں، جو اپنی شادی شدہ زندگی سے خوش نہ ہو۔

شادی کے متعدد طبی فوائد حاصل ہوتے ہیں

یعنی صحت مند دل سے لے کر جسمانی وزن میں کمی تک۔اس تحقیق کے دوران 19 ہزار سے زائد شادی شدہ افراد کے ڈیٹا کا جائزہ لیا گیا، جن سے 1978 اور 2010 کے دوران شادی سے خوشی اور معیار کے بارے میں مختلف سوالات پوچھے گئے تھے۔

جن لوگوں نے شادی کو انتہائی خوش باش قرار دیا ہے یا اس سے کافی حد تک خوش ہیں، تو ان میں کسی بھی وجہ سے جلد مو-ت کا خطرہ 20 فیصد کم پایا گیا۔

کولوراڈو یونیورسٹی کی تحقیق میں مزید بتایا گیا کہ شادی کے بعد اچھا تعلق متعدد طریقوں سے صحت میں بہتری کا باعث بنتا ہے، خصوصاً شریک حیات ایک دوسرے میں صحت مند عادات کو اپنانے کی حوصلہ افزائی کرتے ہیں۔

اسی طرح خوش باش شادی کا تعلق نفسیاتی صحت کو بھی بہتر بناتا ہے جو کہ جسم کے لیے فائدہ پہنچاتا ہے۔محققین کا کہنا تھا کہ ذہنی صحت جسمانی صحت پر مثبت اثرات مرتب کرتی ہے اور شادی کے بعد شریک حیات سے مضبوط تعلق سے ذہنی صحت کے ساتھ جسمانی صحت بھی بہتر ہوتی ہے۔

انہوں نے بتایا کہ شدہ افراد جو اپنے رشتے سے بہت خوش ہوتے ہیں اورشریک حیات سے ملنے والا سماجی تعاون بھی صحت کے لیے اہم ثابت ہوتا ہے اور زندگی میں تناﺅ مسئلہ نہیں بن پاتا۔

دوسری جانب شادی کے بعد شریک حیات سے خراب تعلق امراض قلب، ہائی بلڈ پریشر سمیت متعدد امراض کا خطرہ بڑھاتا ہے۔

 

class=”dpsp-share-text”>Pلیٹیسٹ نیوز پاکستان

اپنا تبصرہ بھیجیں