×

راتوں رات یہ کام کرکے ایک بچے کو جنم دیا جاتا ہے،اور وہ بچہ وزیراعلیٰ بلوچستان بن جاتا ہے،مریم نواز بلو چ نوجوانوں کو کس کس طریقے سے بھڑکاتی رہیں؟جانیے

کوئٹہ (مانیٹرنگ ڈیسک) پی ڈی ایم کے جلسے کے دوران مریم نواز کےکیے گئے خطاب کو سیاسی مبصرین اداروں کے خلاف ایک اور سخت تقریر قرار دے رہے ہیں۔

مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر مریم نواز نے جلسے کے دوران تقریر کرتے ہوئے کہا ہے کہ بلوچ نوجوانوں کے ساتھ سوتیلوں جیسا سلوک کیا جا رہا ہے۔

راتوں رات ایک پارٹی بنا کر ایک بچے کو جنم دیا جاتا ہے اور اسے بلوچستان کا وزیراعلیٰ بنا دیا جاتا ہے۔ کئی گھروں سے تین تین بھائیوں کو اٹھا لیا جاتاہے۔

لوگ لاپتہ

ہوجاتے ہیں۔ ایک بچی کے تین بھائیوں کو اٹھالیا گیا ، تین سال سے ان کا کچھ پتہ نہیں ہے، مجھے جیل میں ڈالا ، میری ماں مر گئی، میرے باپ کو آپ نے 2 بار جیل میں ڈالا تو میری آنکھ میں آنسو نہیں آئے لیکن جب میں نے اس بچی کی بات سنی تو میری آنکھ میں آنسو آگئے، شرم کرو، خدا کا خوف کرو، تمہارے بھی بچے ہیں۔

بچے مرجائیں کوئی تو سکون آجاتا ہے، لیکن جب کچھ پتہ ہی نہ ہو تو سوچو ان ماں باپ ، بہن بھائیوں پر کیا گزرتی ہوگی، اللہ کے قہر کو آواز نہ دو، اللہ کا واسطہ ہے کہ ہوش کے ناخن لو، اپنے لوگوں سے سوتیلے جیسا سلوک نہ کرو۔

مریم نواز کا کہنا تھا کہ بلوچستان کے عوام کو اپنے نمائندے چننے کا کوئی حق نہیں ہے

راتوں رات

یہ کام کرکے ایک بچے کو جنم دیا جاتا ہے،اور وہ بچہ وزیراعلیٰ بلوچستان بن جاتا ہے،مریم نواز بلو چ نوجوانوں کو کس کس

طریقے سے بھڑکاتی رہیں؟جانیے

اپنا تبصرہ بھیجیں