×

سکولز کھولنے کانتیجہ ، ایک ہی سکول کے کتنے اساتذہ وائرس کا شکار ہو گئے۔۔والدین اور بچوں کیلئے افسوسناک خبر ۔۔

چکوٹھی(ویب ڈیسک ) آزاد کشمیر کے ضلع جہلم ویلی کے قصبہ سراں میں قائم گورنمنٹ ہائی سکول پر کرونا کا حملہ چھ ٹیچروں میں وائرس کی تصدیق کے بعد ڈپٹی کمشنر نے سکول پانچ دن کے لیے سیل کر دیا گیا۔

ڈی ایچ او جہلم ویلی ڈاکٹر نعمان منظور کے مطابق گورنمٹ ہائی سکول سراں کے چھ ٹیچروں کے کرونا وائرس کے ٹیسٹ مثبت آئے ہیں سکول کو سیل کر دیا گیا مزید ٹیسٹ کیے جا رہے ہیں ڈی ایچ او نعمان منظور نے تمام

لوگوں اور اداروں کے سربراہان کو ہدایت جاری کی ہے کہ وہ کرونا ایس او پی پر سختی سے عمل کریں تانکہ کرونا کی روک تھام ممکن ہو پائے دریں اثناء کرونا کی روک تھام کے لیے ضلع جہلم ویلی بھر میں کرونا کی روک تھام کے لیے انتظامیہ کی جانب سے جمعہ کے روز کیا جانے والا لاک ڈائون مذاق بن کر رہ گیا ضلع بھر کے چھوٹے بڑے بازاروں ہٹیاں بالا،چناری،چکوٹھی،چکار اور گردونواح میں میںبا اثر دوکاندار اپنی دوکانیں کھول کر کھلے عام کارروبار کرنے لگے جبکہ غریب متوسط طبقہ کے دوکانداروں کی دوکانیں پولیس نے ڈنڈے کے زور پر بند کروانا شروع کر رکھی ہیں عوامی حلقوں نے لاک ڈائون کے نام پر ضلع جہلم ویلی بھر میں دوہرے معیار کی شدید الفاظ کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت آزاد کشمیر کو فوری طور پر انتظامیہ اور پولیس کے دوہرے معیار کا نوٹس لینا چاہیے اگر جمعہ کے روز لاک ڈائون کرنا ہے تو پھر ہر چھوٹے بڑے دوکاندار کی دوکان بند ہونی چاہیے یہ کونسا طریقہ کار ہے کہ بااثر دوکاندار اپنی دوکانیں کھول کر کارروبار کرتے رہتے ہیں جبکہ غریب دوکاندار کی دوکان کو پولیس اور انتظامیہ ڈنڈے کے زور پر بند کروا دیتی ہے متاثرہ تاجروں کا کہنا ہے کہ وزیراعظم کے آبائی ضلع میں ظلم اور نہ انصافی کی انتہا کر دی گئی ہے ادھر غریب کو کوئی پوچھنے والا نہیں ہے غریب کے لیے قانون جبکہ امیر کے لیے کسی بھی قسم کا کوئی قانون موجود نہیں ہے۔

سکولز کھولنے کانتیجہ ، ایک ہی سکول کے کتنے اساتذہ وائرس کا شکار ہو گئے۔۔والدین اور بچوں کیلئے افسوسناک خبر ۔

۔

اپنا تبصرہ بھیجیں