×

10 روپےلوگ کسی کو دے دیں تو احسان جتاتے نہیں تھکتے،لوگوں کی فلاح وبہبودکےلیےچپکے سے 1200 ارب روپے خرچ کرنے والاانسان،یہ عظیم انسان کون ؟کس ملک سے تعلق ،کیاکاروبارکرتاہے ،زندہ دل انسان کی تمام تفصیلات جانیں اس خبرمیں

سان فرانسسکو(Pلیٹیسٹ نیوز پاکستان) ایئرپورٹ ریٹیل کمپنی ’ڈیوٹی فری شاپرز‘شریک بانی چارلس شوک نے 8ارب ڈالر (تقریباً 13کھرب 23ارب روپے) کی خطیر رقم فلاحی کاموں کے لیے عطیہ کردی۔ انڈیا ٹائمز کے مطابق چارلس شوک فینے نے اپنی ایک فلاحی تنظیم بنا رکھی ہے جس کا نام

’دی اٹلانٹک فیلنتھروپیز‘ ہے اور انہوں نے یہ رقم اپنی اسی تنظیم کو عطیہ کی اور پھر اس تنظیم کے ذریعے دنیا بھر میں یونیورسٹیوں اور فلاحی تنظیموں میں بطور عطیہ تقسیم کر دی گئی۔89سالہ چارلس شوک انٹرویوز میں بارہا کہہ چکے ہیں کہ وہ ’جب تک زندہ ہیں، خیرات کرتے رہیں‘ کے آئیڈیا پر یقین رکھتے ہیں۔ وہ کہہ چکے ہیں کہ وہ اپنے نام سے کوئی خیراتی تنظیم بھی نہیں بنائیں گے اور وہ یہ بھی نہیں چاہتے کہ ان کے مرنے کے بعد ان کے نام سے ایسی کوئی تنظیم بنے۔ رپورٹ کے مطابق انہوں نے اپنی تمام دولت عطیہ کر دی ہے لیکن کبھی ایک بار بھی انہوں نے عطیہ کرتے ہوئے اپنا نام ظاہر نہیں کیا بلکہ ہمیشہ خفیہ طور پر ہی خیرات کی۔یہی وجہ ہے کہ سانس فرانسسکوکے رہائشی اس شخص کو ’خدمت خلق کا جیمز بانڈ‘ (James Bond of Philanthropy) بھی کہا جاتا ہے۔ وہ کبھی دنیا کے امیر ترین افراد میں شمار ہونے والے ارب پتی تھے لیکن انہوں نے اپنی لگ بھگ تمام دولت فلاحی کاموں کے لیے عطیہ کر دی ہے۔ فوربز سے گفتگو کرتے ہوئے چارلس شوک کا کہنا تھا کہ ”میں بہت مطمئن ہوں کہ میں نے اپنی دولت اپنی نگرانی میں عطیہ کر دی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں