×

نوازشریف کو سرنڈر کرنے کاموقع ددیا لیکن وہ نہیںآئے اسلا م آباد ہائی کورٹ نے بڑا حکم جاری کردیا

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک )سابق وزیر اعظم میاں نواز شریف کی العزیزیہ ریفرنس میں سزا کیخلاف درخواست پر سماعت اسلام آباد ہائی کورٹ کے جسٹس عامر فاروق اور جسٹس محسن اختر کیانی پر مشتمل ڈویژن بینچ نے کی ،سابق وزیراعظم کی طرف سے کیس کی پیروی خواجہ حارث اور نیب کی طرف سے

پراسیکیوٹر جہانزیب بھروانہ نے کی۔دوران سماعت جسٹس عامر فاروق نے استفسار کیا کہ کیا احتساب عدالت نے نواز شریف کو اشتہاری قرار دے دیا گیا ہے؟اگر اشتہاری قرار دے دیا گیا ہے تو نواز شریف کی عدالتوں میں زیر التوا درخواستوں پر کیا اثر ہوگا ؟جس پر نوازشریف کے وکیل خواجہ حارث نے عدالت کو بتایا کہ اشتہاری قرار دیئے جانے کا اس عدالتی کارروائی پر اثر نہیں پڑے گا ،عدالت نے استفسار کیا کہ اشتہاری ہونے کے بعد کیا ہم نواز شریف کی درخواست پر سماعت کر سکتے؟نیب پراسیکیوٹر جہانزیب بھروانہ نے عدالت کو بتایا کہ توشہ خانہ ریفرنس میں اشتہاری ہونے کے بعد نواز شریف کو کوئی ریلیف نہیں مل سکتاجس پر جسٹس عامر فاروق نے ریمارکس دیئے کہ پرویز مشرف کیس میں عدالت قرار دے چکی مفرور کو سرنڈر کرنے سے قبل نہیں سنا جاسکتا کیس کو سننے سے پہلے نواز شریف کو سرنڈر کرنا لازمی ہے نواز شریف کو پہلے مفرور قرار دیتے ہیں پھر اپیل سن لیتے ہیں جس پر خواجہ حارث نے عدالت سے استدعا کی کہ نواز شریف کو اپنا جواب فائل کرنے کا موقع دیا جائے۔دوران سماعت جسٹس عامر فاروق نے استفسار کیا کہ کیا اشتہاری قرار دینے کے بعد ہم کسی اور درخواست پر فیصلہ کرسکتے ہیں جس پر خواجہ حارث نے عدالت کو بتایا کہ نواز شریف بیرون ملک علاج کے لئے گئے ہیں قانونی نمائندہ کے ذریعے جواب کا موقع دے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں