×

جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کی اہلیہ نے ایف بی آر سے ایسی چیز مانگ لی کہ عمران خان سمیت ساری کابینہ پریشان ہوگئی

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک، Pلیٹیسٹ نیوز پاکستان )جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کی اہلیہ سرینا عیسیٰ نے ایف بی آر سے وزیراعظم عمران خان کا ٹیکس ریکارڈ مانگ لیا۔

نجی ٹی وی کے مطابق جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کی اہلیہ سرینا عیسیٰ نے ایف بی آر کو اپنے مفصل جواب میں کہاکہ ایف بی آر نے قانون کی خلاف ورزی کرتے ہوئے میرا ٹیکس ریکارڈ سویلین شہریوں کو فراہم کیا۔

سرینا عیسیٰ نے مطالبہ کیا ہے کہ انہیں وزیراعظم عمران خان، وزیر قانون فروغ نسیم، مشیر برائے احتساب شہزاد اکبر، سابق اٹارنی جنرل انور منصور خان، وحید ڈوگر، اشفاق احمد کا ٹیکس ریکارڈ دیا

جائے۔

انہوں نے ایف بی آر کو اپنے جواب میں یہ بھی کہا کہ ان افراد کے خاندان کے ذرائع آمدن، انکم ٹیکس اور ٹیکس ریٹرن سمیت بیرون ممالک بینک اکاونٹس کی تفصیلات بھی فراہم کی جائیں۔

دریں اثنا ایف بی آرنے جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کی اہلیہ سرینہ عیسیٰ کی منی ٹریل کو غیر تسلی بخش قرار دے دیا۔ نجی ٹی وی نے ذرائع کے حوالے سے بتایاکہ ایف بی آر نے سرینہ عسیی کی لندن جائیدادوں کی جمع کرائی گئی منی ٹریل کا جائزہ لیا اور پھر 21 اگست کو سیکشن 122 اور 111 کے تحت 2 نوٹس بھیجے۔

ذرائع کے مطابق ایف بی آر کی جانب سے سرینہ عیسی کو بھیجے گئے نوٹس میں کہا گیا ہے کہ آپ کی مجموعی آمدن لندن جائیدادیں خریدنے کے لیے کافی نہیں تھی۔

ذرائع کا بتانا ہے کہ ایف بی آر کی ٹیم کے مطابق سرینہ عیسیٰ کی ٹیکس والی آمدنی 93 لاکھ 75ہزار روپے تھی ، لندن کی تینوں جائیدادوں کی قیمت 10 کروڑ 43 لاکھ روپے تھی۔

ذرائع کے مطابق سرینہ عیسیٰ نے بھی ایف بی آر کی جانب سے 21 اگست کو بھیجے گئے خطوط کا جواب بھی جمع کرا دیا ہے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ سرینہ عیسیٰ کی جانب سے جواب میں کہا گیا ہے کہ ایف بی آر نے میری 2243 کنال زمین کی زرعی آمدن شامل نہیں کی، ایف بی آر نے کلفٹن کی جائیدادوں کی وصول آمدن بھی شمار نہیں کی۔

ذرائع کے مطابق سرینہ عیسیٰ کا کہنا ہے کہ ایف بی آر نے میریملازمت کی آمدن کو بھی لندن جائیدادوں کی قیمت میں شامل نہیں کیا۔

ذرائع کے مطابق سرینہ عیسی کا ایف بی آر کو جواب میں کہنا تھا کہ میری انکم ٹیکس ریٹرن کی تفصیلات بھی نہیں دی گئیں۔ذرائع کا کہنا ہے سرینہ عیسیٰ نے ایف بی آر کی ٹیم پر عدم اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ میرے بیٹے ارسلان عیسی کی لیگل ٹیم نے وکالت سے بھی معذرت کر لی ہے۔

سرینہ عیسی نے ایف بی آر کو اپنے جواب میں یہ بھی کہا ہے کہ ایف بی آر کی ٹیم میرے گوشواروں میں بھی ردبدل کر سکتی ہے۔

موضوعات:سرینا عیسیٰ

پلیز مجھے بھی بتا دیں

رابندر ناتھ ٹیگور بنگالی دانشور‘ شاعر اور مصنف تھے‘ یہ نوبل انعام حاصل کرنے والے پہلے ہندوستانی بھی تھے‘ ٹیگور کو 1913ء میں ادب کا نوبل انعام ملا‘ برطانوی شاہ نے نوبل انعام کے دو سال بعد انہیں سر کا خطاب بھی دے دیا‘ یہ خطاب برطانوی راج میں انتہائی معزز شخصیات کو دیا جاتا تھا‘ اعزاز پانے .

…مزید پڑھئے‎

رابندر ناتھ ٹیگور بنگالی دانشور‘ شاعر اور مصنف تھے‘ یہ نوبل انعام حاصل کرنے والے پہلے ہندوستانی بھی تھے‘ ٹیگور کو 1913ء میں ادب کا نوبل انعام ملا‘ برطانوی شاہ نے نوبل انعام کے دو سال بعد انہیں سر کا خطاب بھی دے دیا‘ یہ خطاب برطانوی راج میں انتہائی معزز شخصیات کو دیا جاتا تھا‘ اعزاز پانے .

…مزید پڑھئے‎

اپنا تبصرہ بھیجیں