×

قرآن پاک کی ایک ایسی آیت جو آپ کو ذہین بنا دے!

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) دو ٹوک ذہن کو دور کرنے اور ذہین بننے کے لئے ایک بہت ہی آزمائشی اور تجربہ کار عمل ہے جس کا فائدہ اٹھا کر آپ نہ صرف اپنے بچوں کا ٹوٹا ہوا ذہن نکال سکتے ہیں بلکہ خود بھی ذہین بن سکتے ہیں۔ سور Surah مزمل کی آیت نمبر 8 “ربک و تبتtل الlayٰلہ تبتیلا کے نام کی تلاوت کریں” روزانہ 313 بار اور پہلی اور آخری 11 مرتبہ درود شریف۔ انشاء اللہ ، اس عمل کی برکت سے ، مدھم دماغ دور ہوجائے گا اگر کوئی شخص خلوص دل سے اپنے گناہوں سے توبہ کرتا ہے اور وعدہ کرتا ہے کہ وہ دوبارہ گناہ سے باز نہیں آئے گا تو اسے اپنے خالق سے رحمت اور مغفرت کی پوری امید رکھنی چاہئے۔ توبہ کرنا واقعتا deep ایک اور نام ہے جس سے کسی کے گناہوں کا گہرا دکھ اور افسوس محسوس ہوتا ہے۔ جب کوئی شخص اپنے طرز عمل کو تبدیل کرنے سے بے چین ہوجاتا ہے تو یہ اس بات کی علامت ہے کہ خدا نے اس پر احسان کیا ہے اور اسے ہدایت کا راستہ دکھایا ہے۔ علمائے کرام کہتے ہیں کہ اللہ رب العزت کی خوشنودی حاصل کرکے ہی دل کی یہ بےچینی ختم ہوسکتی ہے۔ اگر پچھتاوا اور توبہ کے احساس کے بعد آپ کا دل پختہ ہو جاتا ہے ، تو علماء کے نزدیک یہ اس بات کی علامت ہے کہ خدا نے آپ کی توبہ کو قبول کر لیا ہے اور آپ کے دل کو راضی کردیا ہے۔ زیادہ تر لوگ نماز پڑھتے ہیں اور ناراض ہوجاتے ہیں اگر یہ قبول نہیں کی گئی ہے حالانکہ کسی کی دعا رد نہیں کی جاتی ہے۔ اس کی قبولیت کے لئے ایک مقررہ وقت ہے۔ سور Surah البقرہ میں اللہ تعالی کا ارشاد ہے: میری اطاعت کرو اور مجھ پر یقین کرو ، یہی ان کی نیکی کا سبب ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں