×

آیت الکرسی کو باقی قرآنی آیات پر فضیلت کیوں حاصل ہے؟

اللہ تعالٰی نے مسلمانوں کو دو عظیم ترین تحائف سے نوازا ہے جو آج سے پہلے کسی امت کو دیا گیا ہے۔ ان تحائف کے فضل سے ہم دین اور دنیا دونوں کو فائدہ پہنچا سکتے ہیں۔ ان میں سے ایک قرآن اور دوسرا سنت ہے۔ اگر قرآن ہمیں عمل کا منصوبہ فراہم کرتا ہے ، تو سنت قرآن کو استعمال کرنے کی کلید ہے جس کے ذریعہ ہم قرآن کی خصوصیات اور اس کی آیات سے واقف ہوجاتے ہیں۔ قرآن کی سب سے بڑی سورت کی 255 ویں آیت کو آیت الکرسی کہا جاتا ہے اور احادیث سے اس کی فضیلت ثابت ہوتی ہے۔ ابی بن کعب بیان کرتے ہیں کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے ان سے پوچھا: “اے ابو منتر! کیا آپ جانتے ہیں کہ آپ کے پاس کتاب اللہ کی سب سے عمدہ آیت کون سی ہے؟ ”میں نے کہا ،“ میں نے جواب دیا کہ صرف اللہ اور اس کا رسول ہی بہتر جانتے ہیں۔ نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم نے (دوبارہ) پوچھا: “اے ابو منھیر! کیا آپ جانتے ہیں کہ آپ کے پاس کتاب اللہ کی سب سے عمدہ آیت کیا ہے؟ ”میں نے کہا: (اللہ لا الہ الا اللہ الحی Hay القیوم) (یعنی آیت الکرسی) رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: اس نے اپنے ہاتھوں پر تالیاں بجائیں اور کہا:” اللہ! (آپ ٹھیک کہتے ہیں) اے ابو منتھر! آپ کا علم مبارک ہے۔ ”- مسلم ، کاتب الصلاح ، باب فدل ، سور Surah کہف اور آیah الکرسی: 81 امام احمد ابن حنبل رحم him اللہ علیہ نے فرمایا: میں نے رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کو سنا۔ ) کہیے کہ ان دو آیتوں میں ، “اللہ لا الہ الا اللہ ھوا الذی القیوم” اور “الملام لا الہ الا اللہ ھوا al الحی القیوم” اللہ تعالی کا عظیم نام ہے۔ اس کا مطلب یہ ہے کہ الکرسی کی آیت کی تلاوت کرنے کی وجہ جو بھی ہو ، چونکہ یہ اللہ کے نام کو پکارتی ہے ، اس کا جواب ضرور ملنا چاہئے۔ حضرت ابو امام رحم Allah اللہ علیہ نے بیان کیا ہے کہ نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: صرف موت ہی انسان کو آیہ کی تلاوت سے روک سکتی ہے ہر نماز کے بعد الکرسی۔ جنت کے وسط میں صرف موت ہے۔ جو سوتے وقت آیت الکرسی کی تلاوت کرے گا وہ صبح تک شیطان سے محفوظ رہے گا۔ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: “جس گھر میں الکرسی کی آیت پڑھی جاتی ہے ، وہاں شیطان بھاگ جاتا ہے اور تین دن تک اس میں داخل نہیں ہوتا ہے ، اور چالیس دن تک اس پر جادو نہیں ہوتا ہے۔ گھر کیا حضرت خواجہ معین الدین چشتی اجمیری رحم says اللہ علیہ کا یہ کہنا کہ ظہریا کے فتوے میں لکھا ہے کہ حضور اکرم said نے ارشاد فرمایا: “جو شخص الکرسی کی آیت پڑھے اور اپنے گھر سے نکلے ، اللہ ستر ہزار فرشتوں کو حکم دیتا ہے کہ وہ اس کی مغفرت کی دعا کرے یہاں تک کہ وہ لوٹ آئے ، اور جو شخص الکرسی کی آیت کی تلاوت کے بعد گھر میں داخل ہوگا ، اللہ اس کے گھر سے غربت دور کردے گا۔ اللہ ہم سب کو قرآن کی ہر آیت سے نوازے۔ مجھے کامیابی عطا فرمائے

اپنا تبصرہ بھیجیں