×

ایسا نہیں چلےگا۔۔۔۔متعدد حکومت شخصیات مستعفی۔۔۔۔استعفوں کی لائن لگ گئی ۔۔آج کی سب سے پریشان کن خبر

واشنگٹن (رائٹرز) امریکی میڈیا کی اطلاعات کے مطابق ، امریکی صدر کے حامیوں کے ذریعہ پارلیمنٹ پر ٹرمپ کے حملے اور اس کے ردعمل کے بعد وائٹ ہاؤس نے استعفیٰ دے دیا۔ امریکی صدر کے نائب قومی سلامتی کے مشیر میٹ پوٹنجر نے چار افراد کی ہلاکت کے بعد استعفیٰ دے دیا ہے جس کی وجہ سے سرد جنگ کے نام سے جانا جاتا ہے۔ امریکی میڈیا رپورٹس کے مطابق میٹ پوٹنجر کے قریبی ساتھیوں نے اس بات کی تصدیق کی ہے کہ وہ صدر ٹرمپ کے کیپٹل ہل حملوں پر ردعمل میں ملوث تھے۔ انہوں نے ریاستہائے متحدہ امریکہ کی پہلی خاتون میلانیا ٹرمپ کے چیف آف اسٹاف کے عہدے سے بھی استعفیٰ دے دیا ہے ، جو وائٹ ہاؤس کے مواصلات ڈائریکٹر اور پریس سکریٹری کی حیثیت سے خدمات انجام دینے والی پہلی خاتون ہیں۔ امریکی میڈیا رپورٹس کے مطابق خاتون اول کے چیف آف اسٹاف اور سماجی سکریٹری طویل عرصے سے ٹرمپ انتظامیہ کے ساتھ کام کر رہی ہیں۔ امریکی میڈیا کے مطابق ، وائٹ ہاؤس کی ایک اور پریس آفیسر سارہ میتھیوز کی بدھ کی رات بھی موت ہوگئی۔ انہوں نے اپنا استعفیٰ پیش کیا جس میں انہوں نے کہا کہ کیپیٹل ہل کے واقعے نے انہیں بری طرح متاثر کیا ہے ، امریکی قوم کو پرامن اقتدار کی منتقلی کی ضرورت ہے۔ امریکی میڈیا کا کہنا ہے کہ قومی سلامتی کے مشیر رابرٹ او برائن کے علاوہ قومی سلامتی کے دیگر اہم عہدے دار بھی مستعفی ہونے پر غور کر رہے ہیں۔ امریکی میڈیا کے مطابق ، توقع ہے کہ ٹرمپ کے ڈپٹی چیف آف اسٹاف کے بھی جلد استعفیٰ دے دیں گے۔ استعفوں کا سلسلہ شروع ہوگیا۔ آج کی سب سے پریشان کن خبر

اپنا تبصرہ بھیجیں