×

تعلیمی اداروں کو مرحلہ وار کھولنے کی تجویز مسترد، پرائیویٹ سکولوں نے بھی اپنا فیصلہ سنا دیا

راولپنڈی (پی این این): تمام پرائیویٹ اسکولس اور کالجز ایسوسی ایشن کی سپریم کونسل نے تعلیمی اداروں کو کھولنے کی ایک مرحلہ وار تجویز کو مسترد کردیا۔ انہوں نے اس بات کا اعادہ کیا کہ ہم اپنے عہدے سے پیچھے نہیں ہٹیں گے اور 11 جنوری کو پورے ملک میں تمام تعلیمی ادارے کسی بھی حالت میں کھولیں گے۔ سپریم کونسل آج راولپنڈی پریس کلب میں بین الصوبائی وزیر تعلیم کے اجلاس میں ہونے والے فیصلوں کا جواب دے گی۔ اجلاس میں آل پاکستان پرائیویٹ اسکولوں اور کالجز ایسوسی ایشن کے ممبران چوہدری ناصر محمود ، حافظ محمد بشارت ، صابر رحمان بنگش ، انعام الدین قریشی ، راجہ جاوید ، ملک عمران ، چوہدری ایاز ، چوہدری عمران ، عبدالوحید اور سعید عباسی نے شرکت کی۔ گہری تشویش کا اظہار کیا کہ 11 جنوری کو ہی حکومت خود تعلیمی ادارے کھولنے کے اعلان پر کیوں پیچھے ہٹ رہی ہے۔ چار جنوری کے حکومتی اعلان کے جواب میں سپریم کونسل سے وابستہ تمام تنظیمیں کل راولپنڈی پریس کلب میں اپنا بیان جاری کریں گی اور خصوصی اعلان بھی کریں گی۔ اجلاس کے شرکاء نے ایک بار پھر اس بات پر زور دیا کہ محکمہ صحت کی مشاورت سے تعلیمی اداروں کے افتتاح کو کیوں مشروط بنایا جارہا ہے۔ کیا محکمہ صحت کی مشاورت سے پاکستان میں دوسرے محکمے کھلے ہیں؟ انہوں نے کہا کہ ہم حکومت کے کسی بھی فیصلے کو قبول نہیں کریں گے جس سے نظام تعلیم مزید تباہی اور بربادی کا باعث بنے گا۔ ہم حکومت کے ساتھ کوئی تصادم نہیں چاہتے ہیں لہذا سب سے اچھی بات یہ ہے کہ بحالی کی اجازت دیں۔ نجی تعلیمی ادارے کورونا ایس او پیز پر مکمل عمل درآمد جاری رکھیں گے جیسا کہ انھوں نے پہلے کیا ہے۔ تعلیمی اداروں کو مرحلہ وار کھولنے کی تجویز کو مسترد کردیا گیا ، نجی اسکولوں نے بھی اپنے فیصلے کا اعلان کردیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں