×

جہنم کی آگ کی گرمی کی کیا کیفیت ہے؟

جبرائیل علیہ السلام نے حضور اکرم) سے قسم کھا کر کہا کہ اگر جہنم کو انجکشن کی طرح کھولا جاتا تو زمین کے سارے لوگ اس تپش سے فوت ہوجائیں گے اور قسم کھائی کہ اگر جہنم کا کوئی پاسبان اس دنیا کے لوگوں کے سامنے حاضر ہوگا تو زمین کے باشندے اس کے خوف سے مر جاتے ہیں۔ اور باقسم نے بیان کیا کہ اگر دنیا کے پہاڑوں پر جہنم کی زنجیر کی زنجیر رکھی گئی تو وہ لرز اٹھیں گے اور وہ اس وقت تک نہیں رکیں گے جب تک کہ وہ نیچے کی زمین پر نہ ڈوبیں۔ (المجمع الاوسط لبرانی ، جلد 2 ، صفحہ 78 ، حدیث 2583) دنیا کی یہ آگ اللہ رب العزت سے دعا کرتی ہے کہ وہ اسے دوبارہ جہنم میں نہ لے ، بلکہ انسان یہ کہ وہ جہنم میں جانے کا کام کرتا ہے اور خوفزدہ نہیں اس آگ کا جس سے آگ خود بھی خوفزدہ ہے اور پناہ مانگتا ہے! (سنن ابن ماجہ ، ابو الزھد صفة النار ، جلد 4 ، صفحات 528) ﻟﻠﻪﺎﺍﻟﻠﻪ! ہمارے ﻣﻨ ﻣﻨﺎﻓﻘﺖ ﺳﮯ اسے اپنے پسندیدہ بندوں میں شمار کرو اور اسے جہنم کی آگ سے بچاؤ۔ آمین پھر آمین یا رب العالمین …

اپنا تبصرہ بھیجیں