×

دنیاوی مشکلات کے پہاڑ ریزہ ریزہ ہوجاتے ہیں

اللہ فرماتا ہے کہ اگر قرآن کو پہاڑوں پر اتارا جاتا تو وہ اس کے وزن میں پھٹ جاتے۔ لیکن انسانی دل نے اسے قبول کر لیا۔ اللہ کی خلیفہ ہونے کے اعزاز کی وجہ سے انسان کتنی بڑی خوبی ہے۔ وہ قرآن کو اپنے سینے میں محفوظ رکھتا ہے۔ تو وہ پرسکون ہو گیا۔ یہ قرآن کا معجزہ ہے جو انسان کو ایسی روحانی قوت دیتا ہے کہ کوئی دوا اس کی جگہ نہیں لے سکتی۔ اور اسے کسی سورت کا فریضہ بھی ادا کرنا چاہئے۔ شفا بخش ہے۔ عارف کہتے ہیں کہ جو شخص مہینے میں ایک بار سور Surah اعراف پڑھے۔ چنانچہ قیامت کے دن اسے کوئی خوف اور غم نہیں ہوگا۔ جو شخص 3 بار سور Surah اعراف پڑھتا ہے وہ ظالم حکمران کے ساتھ حسن سلوک کرتا ہے۔ اگر کوئی شخص سورت الاعراف لکھتا ہے اور اسے اپنے پاس رکھتا ہے تو وہ ہر طرح کی دنیاوی پریشانیوں سے محفوظ رہے گا۔ روشن خیالی ہوگی۔ اور اگر کوئی شخص سور Surah اعراف لکھ کر اس میں شہد ملا کر پی لے تو اس کے علم میں اضافہ ہوگا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں