×

افسوسناک انکشاف : درجنوں پاکستانی طلباء کا اپنی ڈگریاں حکومت اور اداروں کو واپس کرنے کا اعلان ، مگر کیوں ؟ جانیے

گوادر(ویب ڈیسک ) حیات بلوچ کے ماورائے عدالت زندگی چھین لیے جانے کے خلاف ضلع گوادر کے 21طالب علموں نے اپنی ڈگریاں چھوڑ دینے کا اعلان کردیا۔ تفصیلات کے مطابق بلوچستان کے شہر تربت میں ایف سی اہلکار کے ہاتھوں جان سے محروم ہونے والے کراچی یونیورسٹی کے طالب علم حیات بلوچ


کے ماورائے عدالت جان سے محروم کیے جانے کے خلاف پاکستان کے مختلف شہروں کی یونیورسٹیز اور کالجز میں زیر تعلیم طالب علموں نے اپنی ڈگریاں چھوڑنے کا اعلان کردیا۔ اس ظلم کے خلاف کل گوادر میں ایک احتجاجی ریلی نکالی گئی ریلی میں سول سوسائٹی سمیت طالب علم اور خواتین کی بڑی تعداد شریک تھی ۔ دوسری جانب ایک اور خبر کے مطابق 2020کی پانچ سو بااثر مسلم شخصیات پر کتاب جاری کردی گئی ہے، وزیر اعظم پاکستان عمران خان کو ’مین آف دی ایئر‘ اور امریکی کانگریس کی راشدہ تلیب کو ’وومن آف دی ایئر‘ قرار دیا گیا ہے۔ کتاب میں سے پہلی 50 شخصیات کا تعلق مذہبی اسکالرز اور سربراہان مملکت سے ہے جبکہ 450 دیگر کا تعلق سیاسی، سماجی اور میڈیا سمیت 13 کیٹیگریز سے ہے۔کتاب میں وضاحت کی گئی ہے کہ اثرورسوخ سے مراد کسی بھی شخص کے پاس (خواہ وہ ثقافتی، نظریاتی، مالیاتی، سیاسی یا دیگر) کو بدلنے کی طاقت ہو جس کا مسلم دنیا پر خاص اثر پڑے گا۔ کتاب میں کہا گیا ہے کہ یہ اثر مثبت بھی ہوسکتا ہے اور منفی بھی جس کا انحصار کسی کے نقطہ نظر پر ہے۔کتاب میں مزید وضاحت کی گئی ہے کہ اس اشاعت کیلئے لوگوں کا انتخاب کا مطلب یہ نہیں کہ ہم ان کے خیالات کی توثیق کرتے ہیں بلکہ ہم صرف ان کے اثرو رسوخ کی پیمائش کرنے کی سادہ سی کوشش کر رہے ہیں۔یہ اثرورسوخ کسی مذہبی اسکالر کا ہوسکتا ہے جو براہ راست مسلمانوں کو مخاطب کرے اور ان کے عقائد اور نظریات کو متاثر کرے یا یہ ایک سماجی و معاشی عوامل کو تشکیل دینے والا حکمران ہوسکتا ہے جس میں لوگ اپنی زندگی بسر کرتے ہیں۔کتاب کی پانچ سو با اثر مسلم شخصیات میں پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان کو ’مین آف دی ایئر‘ اور امریکی کانگریس کی خاتون مسلم رہنماء راشدہ تلیب کو ’وومن آف دی ایئر‘ قرار دیا گیا ہے۔








اپنا تبصرہ بھیجیں