×

پوری ٹیم مینجمنٹ وسیم اکرم سے سخت ناراض ہو گئی ،مگر کیوں؟ جان کر آپ کی بھی حیرت کی انتہا نہ رہے گی

لاہور (ویب ڈیسک)پاکستان کرکٹ ٹیم مینجمنٹ سابق کپتان وسیم اکرم کی بطور کمنٹیٹر کھلاڑیوں پر تنقید کے باعث ناراض ہو گئی ہے اور دبے الفاظ میں بورڈ حکام سے گلہ بھی کیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق سابق کپتان وسیم اکرم پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کرکٹ کمیٹی کے اہم رکن ہیں اور بطور کمنٹیٹر کھلاڑیوں پر


تنقید کرتے ہیں جبکہ انگلینڈ کیخلاف ٹیسٹ سیریز کے دوران کپتان اظہر علی اور ٹیم ممبران کی غلطیوں پر سخت باتیں کر چکے ہیں۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ٹیم انتظامیہ اور کھلاڑیوں نے دبے الفاظ میں بورڈ حکام سے گلہ کیا ہے کہ کرکٹ کمیٹی کے ممبر ہونے کے ناتے سابق کپتان کونرمی سے بات کرنی چاہئے، اس وقت وسیم اکرم کرکٹ کمیٹی کے واحد رکن ہیں جو اپنی رائے کا اظہار کررہے ہیں۔ذرائع کے مطابق کرکٹ کمیٹی کے دیگر ممبران نے چپ کا روزہ رکھا ہوا ہے اور صرف وسیم اکرم ہی بولتے ہیں جس پر ٹیم انتظامیہ اور کھلاڑی نالاں ہیں تاہم بورڈ حکام نے انہیں دلاسہ دیا ہے کہ وہ اس معاملے پر وسیم اکرم سے بات کریں گے۔جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق پاکستان اور انگلینڈ کے درمیان جاری تیسرے ٹیسٹ میچ میں انگلش بلے باز زیک کرالی پاکستانی باﺅلرز کیلئے ڈراﺅنا خواب بن گئے ہیں جنہوں نے یادگار اننگز کھیلتے ہوئے ٹیسٹ کیرئیر کی پہلی ڈبل سنچری سکور کی اور 267 رنز بنا کر میچ پر انگلینڈ کی گرفت بھی بے حد مضبوط کر دی ہے۔ دی روزباﺅل ساﺅتھمپٹن میں جاری میچ کے دوسرے روز زیک کرالی اور جوز بٹلر نے 332 رنز 4 کھلاڑی آﺅٹ سے اننگز کا آغاز کیا تو کسی پاکستانی باﺅلر کی ایک نہ چلنے دی۔ دونوں نے پراعتماد کھیل پیش کرتے ہوئے پانچویں وکٹ کی شراکت میں 359 رنز جوڑے اور مجموعی سکور 486 تک پہنچا دیا۔ اس موقع پر زیک کرالی اسد شفیق کی گیند پر محمد رضوان کے ہاتھوں سٹمپ آﺅٹ ہو گئے، انہوں نے انتہائی عمدہ بیٹنگ کرتے ہوئے 267 رنز بنائے جبکہ جوز بٹلر نے بھی ان کا خوب ساتھ دیا جنہوں نے 140 رنز بنا لئے ہیں اور بدستور کریز پر موجود ہیں۔ قبل ازیں میچ کے پہلے روز انگلینڈ نے ٹاس جیت کر بیٹنگ کا فیصلہ کیا تو صرف 12 کے مجموعی سکور پر شاہین شاہ آفریدی نے پہلی کامیابی دلا دی اور روری برنز کو 6 کے انفرادی سکور پر شان مسعود کے ہاتھوں کیچ کروایا۔ انگلینڈ کی دوسری وکٹ 73 کے مجموعی سکور پر گری اور ڈومینک سبلی 22 رنز بنا کر یاسر شاہ کی گیند پر ایل بی ڈبلیو ہو گئے۔ کپتان جو روٹ بھی زیادہ دیر کریز پر نہ ٹھہر سکے اور 29 رنز بنا کر نسیم شاہ کی گیند پر محمد رضوان کے ہاتھوں کیچ ہوئے جبکہ 127 کے مجموعی سکور پر یاسر شاہ نے اولی پوپ کو کلین بولڈ کر دیا جنہوں نے صرف 3 رنز بنائے۔ زیک کرالی اور جوز بٹلر نے عمدہ بلے بازی کا مظاہرہ کرتے ہوئے پانچویں وکٹ کی شراکت میں 202 رنز جڑے اور ٹیسٹ میچ پر اپنی ٹیم کی گرفت مضبوط کرنے میں اہم کردار ادا کیا۔ زیک کرالی 171 رنز اور جوز بٹلر 87 رنز کیساتھ کریز پر موجود ہیں جو میچ کے دوسرے روز نامکمل اننگز آگے بڑھائیں گے۔ کھیل کے پہلے روز پاکستان کی جانب سے یاسر شاہ سب سے کامیاب باﺅلر رہے جنہوں نے 28 اوورز میں 107 رنز کے عوض 2 کھلاڑیوں کو پویلین کی راہ دکھائی جبکہ شاہین شاہ آفریدی اور نسیم شاہ نے ایک، ایک وکٹ حاصل کی۔








اپنا تبصرہ بھیجیں